سام سنگ نے مہنگے فونز جیسے فیچرز والے سستے موبائل پاکستان میں متعارف کرادیئے

اگر تو آپ مہنگے اسمارٹ فونز خریدنے کی سکت نہیں رکھتے مگر ویسے فیچرز چاہتے ہیں؟ تو سام سنگ کے نئے فونز یہ خواہش پوری کرنے میں مددگار ثابت ہوسکتے ہیں. جی ہاں سام سنگ نے پاکستان میں اپنے تین نئے اسمارٹ فونز متعارف کرا دیئے ہیں.ان میں سے ایک فون اے 8 (2018)، دوسرا اے ایٹ پلس (2018 ) اور تیسرا گرینڈ پرائم پرو ہے.

گلیکسی اے ایٹ اور ایٹ پلس سام سنگ کے پہلے فونز ہیں جن کے فرنٹ پر ڈوئل کیمرہ سیٹ اپ دیا گیا ہے اور یہ بالترتیب 5.6 اور 6 انچ امولیڈ ڈسپلے کے حامل ہیں. ان میں ایسے فیچرز موجود ہیں جو گلیکسی ایس ایٹ یا نوٹ ایٹ میں دیئے گئے ہیں،جیسے بیزل لیس ڈسپلے، واٹر اور ڈسٹ ریزیزٹنٹ،

چار سے چھ جی بی ریم وغیرہ. تاہم اس کا خاص فیچر اس کا ڈوئل سیلفی کیمرہ سیٹ اپ ہے جس میں ایک 16 میگا پکسل جبکہ دوسرا 8 میگا پکسل کیمرے کے ساتھ ہے اور لائیو فوکس نامی فیچر سے آپ پس منظر کے دھندلے پن کو ایڈجسٹ کرسکتے ہیں. اس کے بیک پر سولہ میگا پکسل کا کیمرہ دیا گیا ہے

جس میں تیز آٹو فوکس اور کم روشنی میں کام کرنے کی صلاحیت کو پہلے کے مقابلے میں بہتر بنایا گیا ہے. اس میں 32 سے 64 جی بی اسٹوریج دی گئی ہے جسے ایس ڈی کارڈ سے 256 جی بی تک بڑھایا جاسکتا ہے، جبکہ 64 بٹ اوکٹا کور پراسیسر، اینڈرائیڈ نوگیٹ 7.1.1 آپریٹنگ سسٹم، یو ایس بی سی، اے ایٹ میں 3000 ایم اے ایچ جبکہ اے ایٹ پلس میں 3500 ایم اے ایچ بیٹری دی گئی ہے.

کمپنی کی جانب سے قیمت کا اعلان تو کچھ دن میں کیا جائے گا تاہم گلیکسی اے ایٹ ممکنہ طور پر 53 ہزار 500 جبکہ اے ایٹ پلس 65 ہزار 500 روپے تک ہوسکتا ہے. گلیکسی گرینڈ پرائم پرو (2018) یہ سام سنگ کا گزشتہ ورژن سے زیادہ بہتر فیچرز کے ساتھ مناسب یا سستا فون قرار دیا جاسکتا ہے.

یہ فون پانچ انچ کے سپرامولیڈ ڈسپلے، پانچ میگا پکسل فرنٹ جبکہ ایٹ میگا پکسل بیک، ڈیڑھ جی بی ریم، سولہ جی بی اسٹوریج جس میں کارڈ سے اضافہ کیا جاسکتا ہے، کواڈ کور 1.4 گیگا ہرٹز پراسیسر اور اینڈرائیڈ نوگٹ آپریٹنگ سسٹم وغیرہ دیئے گئے ہیں. اس فون کی قیمت 20 ہزار روپے سے کم ہونے کا امکان ہے.

اپنا تبصرہ بھیجیں